Ahmed Faraz Love Poetry

Pages: 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12

  میں جانتا ھوں کہ دنیا تجھے بدل دے گی میں مانتا ھوں کہ ایسا نہیں بظاھر تو

  میری قسمت کی لکیریں میرے ھاتھوں میں نہ تھیں  تیرے   ماتھے   پر   کوئی   میرا   مقدر   دیکھتا

  خود اپنے آپ کو پرکھا تو یہ ندامت ھے کہ اب کبھی اسے الزامِ بے وفائی نہ دوں

Khud apnay ap ko parkha to ye nadamat hy,
k ab kabhi usay ilzam bewafai na du


  کروں نہ یاد، مگر کس طرح بھلاؤں اسے غزل بہانہ کروں اور گنگناؤں اسے

  کہیں آجائے میسر تو مقدر تیرا ورنہ آسودگئ دہر کو نایاب سمجھ

Kahen ajaye muyaser to muqadar tera,
warna asoodgy dehr ko nayab samaj


  جدائیاں ھوں تو ایسی کہ عمر بھر نہ ملیں فریب دو تو ذرا سلسلے بڑھا کے مجھے