Ahmed Faraz Love Poetry

Pages: 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12

  مجھ سے کیا پوچھتے ھو شہر وفا کیسا ھے  ایسے لگتا ھے صلیبوں  سے  اتر  کر  آیا

  ملیں جب ان سے تو مبہم سی گفتگو کرنا  پھر اپنے آپ سے سو سو وضاحتیں کرنی

Milen jab un say to mubhim sy guftagoo karna,
phir apnay ap say so so wazahten karna


  ملے کوئی بھی ترا ذکر چھیڑ دیتے ھیں   کہ  جیسے  سارا  جہاں رازدار اپنا ھے

  کوئی بتلاؤ کہ اک عمر کا بچھڑا محبوب اتفاقاَ کہیں مل جائے تو کیا کہتے ھیں

Koi batlao k ik umar ka bichra mehboob,
itafaqan kahen mil jaye to kya kehtay hain


  کونسا نام تجھے دوں مرے ظالم محبوب تو ھی قاتل ھے مرا تو ھی مسیحا میرا

  کچھ تو مرے پندار محبت کا بھرم رکھ تو بھی تو کبھی مجھ کو منانے کے لئے آ

Kuch to mery pindar e mohabat ka bharm rakh,
tu bhi to kabhi muj ko manany kay liye a


  کیا ایسے کم سخن سے کوئی گفتگو کرے جو مستقل سکوت سے دل کو لہو کرے