Ahmed Faraz Love Poetry

Pages: 1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12

 پیار ہوا نہ دو کہ یہ جنگل کی آگ ھے یارو عجب نہیں ھے اگر پھیل جائے شہروں میں

  رہِ وفا میں کوئی آخری مقام نہیں شکستِ دل کو محبت کی انتہا نہ سمجھ

Rah e wafa main koi akhry maqam nahi,
shikast dil ko mohabat ki intaha na samaj


رنجش ھی سہی دل ھی دکھانے کے لئے آ آ پھر سے مجھے چھوڑ کے جانے کے لئے آ

  رکنا ھو اگر تو سو بہانے جانا ھو تو راستے بڑے ھیں

Rukna ho agr to so bahany,
jana ho to rastay baray hain


شہر میں حسن سادہ کو کانٹوں میں تولا گیا بک گئے کوڑیوں مول جو گاؤں کے پھول تھے

  پہلے پہل کا عشق ابھی یاد ھے فراز دل خود یہ چاہتا تھا کہ رسوائیاں بھی ھوں

Pehlay pehl ka ishq abhi yad hy faraz,
dil khud ye chahta tha k ruswayan bhi hon


  پہلے  بھی  لوگ  آئے  کتنے  ھی  زندگی  میں   وہ ھر طرح سے لیکن اوروں سے تھا جدا سا